اشاعت کے باوقار 30 سال

بھارتی عوام پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کی واپسی کی خواہش رکھتے ہیں

بھارتی عوام پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کی واپسی کی خواہش رکھتے ہیں

نئی دہلی : میں تشدد اور جنگجویت کو ناقابل قبول قرار دیتے ہوئے بھارتی وزیر دفاع ارون جیٹلی نے کہا کہ ملک کے عوام کی یہ خواہش ہے کہ پاکستانی زیر انتظام کشمیر بھی کو واپس لیا جائے ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق راجیہ سبھا میں گفتگو کرتے ہوئے وزیر دفاع ارون جیٹلی نے کہا کہ جموں و کشمیر کے اندر جنگجوؤں کے خلاف فوج نے بھرپور دباؤ بڑھایا ہے اور جموں و کشمیر پولیس ‘ فوج اور دیگر سکیورٹی ایجنسیوں کے خلاف آپریشن تیز کر دیئے ہیں جس کی وجہ سے وہاں تشدد میں کمی واقعہ ہو رہی ہے بھلے ہی وہاں اکا دکا واقعات اب بھی رونما ہو رہے ہیں لیکن حقیقی معنوں میں جنگجوؤں کے خلاف دباؤ بڑھ رہا ہے وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ جموں و کشمیر میں کچھ ایک عناصر نے ہاتھ میں بندوقیں اٹھا رکھی ہیں اور وہ ملک کے شمال مشرقی علاقوں میں بھی تشدد پھیلانے کی کوشش کر رہے ہیں انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ جموں و کشمیر سمیت پورے ملک میں تشدد اور دہشت گردی کے لئے کوئی جگہ نہیں لہذا جو لوگ اس کام میں ہیں ان کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔ وزیر دفاع کا مزید کہنا تھا کہ جموں و کشمیر کے ایک حصے پر پاکستان قابض ہے اور اب ملک کے عوام اس حصے کو بھی واپس لینے کی خواہش رکھتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں ہمیں موجودہ سرکار سے کافی ساری امیدیں وابستہ ہیں تاہم ایسے میں جو بھی فیصلہ لیا جائے گا مرکزی حکومت کا فیصلہ ہو گا اور سبھی کو اس میں اعتماد میں لیا جائے گا۔ انہو ں نے چین کی جانب سے 1962 کی جنگ سے سبق حاصل کرنے کی نصیحت پر کہا کہ بھارت نے1962 کی جنگ میں سبق ضرور حاصل کیا ہے تاہم یہ اسی سبق کا نتیجہ تھا کہ 1971 کی جنگ میں بڑی کامیابی حاصل کی گئی ۔