اشاعت کے باوقار 30 سال

انٹرنیٹ نظام میں تعطل، ملکی معیشت کو ایک ارب کا نقصان

انٹرنیٹ نظام میں تعطل، ملکی معیشت کو ایک ارب کا نقصان

اسلام آباد: سعودی عرب میں عالمی انٹرنیٹ آپٹیکل فائبر کیبل کٹنے سے پاکستان میں انٹرنیٹ نظام میں تعطل سے ابتدائی تخمینہ کے مطابق ایک ارب کا نقصان ہوا ۔ پی ٹی اے نے مالی نقصان کا اندازہ لگانے کے لئے اداروں سے رپورٹ طلب کرلی ۔ تین روز قبل انٹرنیٹ کیبل جو جدہ کے قریب کٹ گئی تھی سے پاکستان کو انٹرنیٹ فراہمی میں تعطل پیدا ہوا اور اس نظام سے منسلک ادارو ں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔پی ٹی سی ایل نے صارفین کو متبادل ذرائع اور نظام سے انٹرنیٹ سروس فراہم کی تاہم رفتار کم ہونے سے پی آئی ا ے سمیت متعدد سرکاری و نجی اداروں کو مشکلات رہیں جس سے ملکی معیشت کو ابتدائی طور پر ایک ارب روپے کانقصان پہنچا ۔پاکستان میں انٹرنیٹ صارفین کی تعداد ساڑھے چار کروڑ ہے ۔ پی ٹی اے کے اعداد و شمار کے مطابق ڈی ایس ایل (DSL)صارفین کی تعداد 1527306، ایچ ایف سی کی تعداد 50571، وائی میکس کی تعداد 168511، ایف ٹی ٹی ایچ کی تعداد 48020، ای او ڈو کی تعداد 729625 اور موبائل انٹرنیٹ استعمال کرنے والے صارفین کی تعداد 42084032 اور مجموعی تعداد 44608065 ہے ۔پی ٹی ا ے چیئرمین اسماعیل شاہ نے دنیا کو بتایا کہ انٹرنیٹ میں تعطل سے ہونے والے مالی نقصان کاتخمینہ لگایا جا رہا ہے ۔پی ٹی سی ایل کے سینئر ایگزیکٹو وائس پریذ یڈنٹ سکندر نقی کا کہنا تھا انٹرنیٹ نظام مکمل بحال ہو چکا ہے ، پی ٹی سی ایل کا بہت زیادہ نقصان نہیں ہوا کیونکہ کیبل جس خطے اور ملک میں کٹتی ہے وہ ملک نقصان کا ذمہ دار ہوتا ہے اس لیے سعودی عرب نے مذکورہ کیبل ٹھیک کی ہے ۔