اشاعت کے باوقار 30 سال

قطری ہوائی جہازوں کو مخصوص فضائی روٹس استعمال کرنے کی اجازت

قطری ہوائی جہازوں کو 9 مخصوص فضائی روٹس استعمال کرنے کی اجازت

جد: سعودی عرب کی قیادت میں دہشت گردی کے خلاف چار عرب ممالک نے بین الاقوامی فضائی سروس کی سلامتی کے پیش نظر قطری مسافر بردار ہوائی جہازوں کو مخصوص فضائی روٹس استعمال کرنے کی اجازت دے دی ۔العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کی ’جنرل سول ایوی ایشن اتھارٹی‘ نے جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ متحدہ عرب امارات، بحرین مصر کے ساتھ مشاورت کے بعد قطری ہوائی جہازوں کو خلیجی ملکوں میں مخصوص نو روٹس اور فضائی گذرگاہوں کو استعمال کرنے کی اجازت دی ہے۔ اس سے قبل قطری فضائی سروس پر ان روٹس کے استعمال پر پابندی عاید تھی۔بیان میں کہا گیا ہے کہ قطری فضائی کمپنیوں کے مسافر بردار جہازوں کو مخصوص روٹس استعمال کرنے کی اجازت دینے کا مقصد بین الاقوامی فضائی سفر کو محفوظ بنانا بنا اور اس ضمن میں فضائی سفری حقوق کے بین الاقوامی ادارے ’ایکاؤ‘ کی سفارشات اور اس کے ساتھ طے پائے معاہدوں پر عمل درآمد کو یقینی بنانا ہے۔بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ قطری ہوائی جہاز مصر کے زیرانتظام بحیرہ روم کی ایک گذرگاہ کو یکم اگست کے بعد استعمال کرسکیں گے جب کہ دیگر گذرگاہیں خلیجی ملکوں کی فضائی حدود کے اندر ہیں جن سے قطری طیاروں کو گذرنے کی منظوری دے دی گئی ہے۔خیال رہے کہ قطر اور اس کے پڑوسی ملکوں کے درمیان ڈیڑھ ماہ قبل اس وقت کشیدگی پیدا ہوئی تھی جب امیر قطر کے ایک متنازع بیان کے بعد سعودی عرب نے دوحہ کا سفارتی بائیکاٹ کردیا تھا۔ سعودی عرب، بحرین، متحدہ عرب امارات اور مصر قطر پر دہشت گردوں کی پشت پناہی اور انہیں مالی معاونت فراہم کرنے کا الزام عاید کرتے ہیں تاہم قطر ان الزامات کو مسترد کرتا چلا آیا ہے۔

loading...