اشاعت کے باوقار 30 سال

کاروبار کے آخری روز پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں تیزی کا رحجان

کاروبار کے آخری روز پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں تیزی کا رحجان

کراچی: کاروبار کے آخری روز پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں تیزی کا رحجان دیکھا گیا اور کے ایس ای 100 انڈیکس 2 بالائی حد عبور کرتا ہوا 45200 پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا۔ تیزی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 47 ارب سے زائد روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے سرمائے کا مجموعی حجم 92 کھرب سے بڑھ کر 93 کھرب روپے پر جا پہنچا۔ جمعہ کو کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس میں 234.46 پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے کے ایس ای 100 انڈیکس 45059.93 پوائنٹس سے بڑھ 45294.39 پوئنٹس پر جا پہنچا اسی طرح 148.11 پوائنٹس کے اضافے سے کے ایس ای 30 انڈیکس 23639.59 پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 31614.65 پوائنٹس سے بڑھ کر 31778.82 پوائنٹس پر بند ہوا۔ کاروباری تیزی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 47 ارب 99 کروڑ 36 لاکھ 47 ہزار 643 روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 92 کھرب 60 ارب 82 کروڑ 17 لاکھ 58 ہزار 222 روپے سے بڑھ کر 93 کھرب 8 ارب 81 کروڑ 54 لاکھ 5 ہزار 865 روپے ہو گیا۔ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعہ کے روز 12 کروڑ 24 لاکھ 52 ہزار حصص کے سودے ہوئے اور ٹریڈنگ ویلیو 6 ارب روپے تک محدود رہی جبکہ جمعرات کے روز 14 کروڑ 81 لاکھ 28 ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے اور ٹریڈنگ ویلیو 8 ارب روپے ریکارڈ کی گئی تھی۔ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعہ کے روز مجموعی طور پر 351 کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے 208 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ، 126 میں کمی اور 17 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ کاروبار کے لحاظ سے ٹی آرجی پاک لمیٹڈ 1 کروڑ 25 لاکھ، دیوان موٹرز 83 لاکھ 94 ہزار، ازگارڈنائن 63 لاکھ 45 ہزار، اینگرو پولیمر 57 لاکھ 77 ہزار اور عائشہ اسٹیل مل 54 لاکھ 44 ہزار حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے۔ قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کے اعتبار سے سپائیر ٹیکسٹائل کے بھاؤ میں 94.15 روپے اور میری پیٹرولیم کے بھاؤ میں 68.34 روپے کا اضافہ جبکہ باٹا پاک کے بھاؤ میں 25 روپے اور سنوفی ایوٹنس کے بھاؤ میں 17.15 روپے کی نمایاں کمی ریکارڈ کی گئی۔

loading...