اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

فرانس میں شہنشاہیت کا خاتمہ

سام سنگ نے سینما انڈسٹری کو تبدیل کر دیا

سام سنگ نے سینما انڈسٹری کو تبدیل کر دیا

لندن: کئی سال سے دنیا بھر کی سینما انڈسٹری ایک ہی طریقے سے چل رہی ہے، البتہ ترقی پذیر اور ترقی یافتہ ممالک میں جدید دور کے مطابق ان میں تھوڑی بہت تبدیلیاں ضرور کی جا چکی ہیں۔ لندن سے نیویارک، پیرس سے ٹوکیو، ممبئی سے سڈنی اور کراچی سے کوالا لمپور تک سینما گھر آج بھی پروجیکٹر کے تحت ہی چلتے ہیں۔سینما گھر بھلے ہی جدید، انٹرنیٹ اور کمپیوٹر ٹیکنالوجی سے آراستہ ہو گئے ہوں، مگر اب بھی سینماؤں کے پردے پر پروجیکٹر ٹیکنالوجی کے تحت ہی فلمیں دکھائی جاتی ہیں۔ مگر اب ایسا نہیں ہو گا، اسمارٹ فونز اور الیکٹرانک آلات تیار کرنے والی کمپنی سام سنگ نے جدید سینما اسکرین متعارف کرا دی، جو در حقیقت ایک بہت ہی بڑی ایل سی ڈی ہے۔ سام سنگ کی جانب سے پیش کی گئی ایل سی ڈی کسی بھی پروجیکٹ سسٹم کے بغیر ایک عام ٹی وی اور ایل سی ڈی کی طرح چلتی ہے۔ سام سنگ کا دعویٰ ہے کہ 4 کے کی حامل ہائی ڈائنامک رینج (ایچ ڈی آر) سے آراستہ ایل سی ڈی کا رزلٹ پروجیکٹر کے تحت چلنے والے کسی بھی جدید ترین پردے سے 10 گنا زیادہ بہتر ہے۔ سام سنگ کے 34 فٹ یا 406 انچ کی ایل سی ڈی کا ریزولیشن 4096 بائی 2160 ہے، جب کہ اس کے سائیڈ میں ہائی کوالٹی اسپیکر لگے ہوئے ہیں، جن میں جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کیا گیا ہے۔ سام سنگ سینما ایل سی ڈی پر فلم دیکھنے کے بعد لوگوں نے اس کے رزلٹ کی تعریف کی۔ کمپنی کے مطابق ایل سی ڈی پر تھری ڈی فلموں کا رزلٹ مزید بہتر بنتا ہے، جب کہ ٹو ڈی فلموں کا رزلٹ شائقین کی سوچ سے بھی بہتر ہے۔