اشاعت کے باوقار 30 سال

جواب داخل نہ کرنے پر ہائی کورٹ کا اظہار ناراضی

جواب داخل نہ کرنے پر ہائی کورٹ کا اظہار ناراضی

لاہور: لاہور ہائی کورٹ نے علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیرپورٹ کی ممکنہ نجکاری کے خلاف کیس میں جواب داخل نہ کروانے پر ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے نجکاری کمیشن کے سینئر افسر کو آئندہ تاریخ سماعت پر طلب کر لیا۔ درخواست گزار سول ایوی ایشن ملازمین کے وکیل عامر سعید راں نے عدالت کو بتایا کہ سول ایوی ایشن ایکٹ کے تحت ایر ٹرانسپورٹ اور ایوی ایشن سروسز کی مینجمنٹ غیر ملکی کمپنی کے سپرد نہیں کی جا سکتی۔ انہوں نے کہا کہ سول ایوی ایشن ملک کے تین بڑے شہروں لاہور، اسلام آباد اور کراچی میں موجودایر پورٹس کی مینجمنٹ ملکی کمپنی کے سپرد کرنے کی بجائے غیر ملکی کمپنی کے سپرد کر رہی ہے جو کہ قومی سلامتی کے خلاف ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایر پورٹس کے رن ویز اور ریڈار سسٹم پاک فضائیہ کے بھی زیر استعمال ہوتے ہیں اگر سول ایوی ایشن کی مینجمنٹ غیر ملکی کمپنی کے پاس چلی گئی تو ملکی دفاع پر بہت بڑا سوالیہ نشان اٹھے گا۔ نجکاری کمیشن کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ انہیں جواب داخل کروانے کے لئے مہلت دی جائے جس پرعدالت نے اظہار برہمی کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر نجکاری کمیشن کے سینئر افسر کو جواب سمیت پیش ہونے کا حکم دے دیا، عدالت نے لاہور ایئرپورٹ کی نجکاری کے خلاف حکم امتناعی میں بھی 26 جولائی تک توسیع کر دی ہے۔

loading...