اشاعت کے باوقار 30 سال

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں تیزی کا رحجان

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں تیزی کا رحجان

کراچی: پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں منگل کے روز تیزی کا رحجان دیکھا گیا اور کے ایس ای 100 انڈیکس 44600 پوائنٹس کی سطح سے بڑھ کر 45300 پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا۔ تیزی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 1 کھرب سے زائد روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے سرمائے کا مجموعی حجم 91 کھرب سے بڑھ کر 93 کھرب روپے پر جا پہنچا۔ منگل کو کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس میں 728.65 پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈکیا گیا جس سے کے ایس ای 100 انڈیکس 44665.41 پوائنٹس سے بڑھ کر 45394.06 پوئنٹس پر جا پہنچا اسی طرح 423.74 پوائنٹس کے اضافے سے کے ایس ای 30 انڈیکس 23586.26 پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 31365 پوائنٹس سے بڑھ کر 31809.073 پوائنٹس پر بند ہوا۔ کاروباری تیزی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 1 کھرب 13 ارب 10 کروڑ 52 لاکھ 83 ہزار 94 روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 91 کھرب 95 ارب13کروڑ 22 لاکھ 12 ہزار 516 روپے سے بڑھ کر 93 کھرب 8 ارب 23 کروڑ 74 لاکھ 95 ہزار 610 روپے ہو گیا۔ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں منگل کے روز 19 کروڑ 1 لاکھ 6 ہزار حصص کے سودے ہوئے اور ٹریڈنگ ویلیو 9 ارب روپے ریکارڈ کی گئی جبکہ پیر کے روز 15 کروڑ 64 لاکھ 87 ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے اور ٹریڈنگ ویلیو 8 ارب روپے تک محدود رہی تھی۔ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں منگل کے روز مجموعی طور پر 361 کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے 237 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ، 101 میں کمی اور 23 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ کاروبار کے لحاظ سے کے اینگرو پولیمر 1 کروڑ 47 لاکھ، ٹی آرجی پاک لمیٹڈ 1 کروڑ 42 لاکھ، کے الیکٹرک لمیٹڈ 1 کروڑ 34 لاکھ، حبیب پیٹروپول 75 لاکھ 61 ہزار اور عائشہ اسٹیل مل 72 لاکھ 45 ہزار حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے۔ قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کے اعتبار سے رفحان میظ کے بھاؤ میں 150 روپے اور ہینوپاک موٹر کے بھاؤ میں 62 روپے کا اضافہ جبکہ یونی لیور فوڈز کے بھاؤ میں 150 روپے اور باٹا پاک کے بھاؤ میں 100 روپے کی نمایاں کمی ریکارڈ کی گئی۔

loading...