اشاعت کے باوقار 30 سال

سپریم کورٹ : قتل کا ملزم 17 سال بعد بری

سپریم کورٹ : قتل کا ملزم 17 سال بعد بری

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے عمر قید کے سزا یافتہ ملزم اسلم عرف اچھو کو 17 سال بعد بری کر دیا ہے، ملزم اسلم پر 1999 میں قصور میں سرور نامی شخص کو قتل کرنے کا الزام تھا۔ تفصیلات کے مطابق منگل کو کیس کی سماعت قائم مقام چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کی، دوران سماعت جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دئے کہ کیس کا کوئی چشم دید گواہ نہیں، نچلی عدالتوں نے حقائق کو نہیں دیکھا، اس وقت کے لاہور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس نے کیس سنا لیکن حقائق کو نہیں دیکھا، چیف جسٹس بھی جب حقائق نہ دیکھیں تو کیا کہہ سکتے ہیں، آئندہ سال 2018 میں اسلم کی عمر قید پوری ہونی ہے ،اس نے بری ہو جانا تھا، اسلم نے جو عمر قید کاٹ لی وہ کس کے کھاتے میں جائے گی، عدالت نے وکلا کے دلائل سننے کے بعد ہائی کورٹ کے فیصلے کو کالعدم قرار دے کر ملزم کو بری کر دیا، ٹرائل کورٹ نے ملزم کو عمر قید سنائی تھی جب کہ ہائی کورٹ نے عمر قید برقرار رکھی تھی۔

loading...