اشاعت کے باوقار 30 سال

برطانیہ میں خاتون نے عید گاہ کے باہر نمازیوں پر گاڑی چڑھا دی

برطانیہ میں خاتون نے عید گاہ کے باہر نمازیوں پر گاڑی چڑھا دی

لندن: برطانیہ میں کار سوار خاتون نے عید اجتماع سے باہر نکلتے نمازیوں پر گاڑی چڑھا دی جس کے نتیجے میں 3 بچوں سمیت 6 افراد زخمی ہو گئے۔ برطانوی میڈیا کے مطابق نیو کاسل شہر میں کار سوار خاتون نے ویسٹ گیٹ اسپورٹس سینٹر کی عید گاہ سے باہر نکلنے والے نمازیوں کے ہجوم پر گاڑی چڑھادی جس کے نتیجے میں 3 بچوں سمیت 6 افراد زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا جہاں 8 سالہ زخمی بچے کی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے۔ واقعے کے وقت سیکڑوں نمازی عید گاہ کے اندر اور باہر موجود تھے اور لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا۔ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے کار چلانے والی خاتون کو گرفتار کر لیا جس کی عمر 42 سال کے لگ بھگ بتائی گئی ہے۔ حکام نے فوری طور پر اسے دہشت گردی یا نفرت پر مبنی واقعہ قرار نہیں دیا ۔ ایک عینی شاہد نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے واقعے کو حادثہ قرار دیا اور کہا کہ خاتون عید کے اجتماع میں شریک تھی اور گاڑی بے قابو ہونے کے باعث نمازیوں پر چڑھ دوڑی۔ یاد رہے کہ 19 جون کو لندن میں حملہ آور نے مسجد کے باہر نمازیوں کو گاڑی تلے کچل دیا تھا جس کے نتیجے میں دو افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہو گئے تھے۔ پولیس نے اسے مسلمانوں کے خلاف دہشت گردی کا واقعہ قرار دیا تھا۔