اشاعت کے باوقار 30 سال

پاکستان نے پہلی بار آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کا ٹائٹل اپنے نام کر لیا

پاکستان نے پہلی بار آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کا ٹائٹل اپنے نام کر لیا

لندن: بھارت کو دھول چٹا کر پاکستان نے پہلی بار آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کا ٹائٹل اپنے نام کر لیا۔ لندن کے کیننگٹن اوول میں کھیلے جا رہے چیمپئنز ٹرافی کے سب سے بڑے معرکے میں پاکستانی بلے بازوں کی شاندار کارکردگی کی بدولت بھارت کو جیت کے لیے 339 رنز کا ہدف دیا جس کے جواب میں بلو شرٹس کی آدھی ٹیم 54 رنز پر پویلین لوٹ گئی تھی تاہم ہاردک پانڈیا کی جارحانہ بلے بازی کی بدولت بھارت کا اسکور آگے بڑھایا۔ بھارت کی جانب سےروہت شرما اور شیکھر دھون نے اننگز کا آغاز کیا تاہم اننگز کی تیسری ہی گیند پر محمد عامر نے روہت کو پویلین واپس بھیج کر پاکستان کو پہلی کامیابی دلائی جس کے بعد ویرات کوہلی بیٹنگ کے لیے آئے۔ اظہر علی نے تیسرے اوور کی تیسری گیند پر کوہلی کا کیچ گرا دیا لیکن محمد عامر نے اگلی ہی گیند پر ایک بار پھر شاندار ڈیلیوری کر کے ویرات کی اننگز کا خاتمہ کیا۔ تیسری وکٹ کے لیے یووراج سنگھ نے شیکھر دھون کا ساتھ دیا اور 27 رنز کی شراکت قائم کی لیکن محمد عامر نے بھارتی بلے بازوں کی ایک نہ چلنے دی اور بظاہر سیٹ دکھائی دینے والے شیکھر دھون کو بھی 21 رنز پر پویلین واپس بھیج دیا۔ ٹاپ آرڈر کی ناکامی کے بعد بھارت ٹیم کی وکٹیں گرنے کا سلسلہ جاری رہا، یووراج سنگھ اور ایم ایس دھونی نے چوتھی وکٹ کے لیے 21 رنز کی شراکت قائم کی لیکن نوجوان اسپنر شاداب خان نے یووراج سنگھ کو 22 رنز پر آؤٹ کیا۔ اگلے ہی اوور میں قومی ٹیم کے ابھرتے ہوئے ستارے حسن علی نے دھونی کی اننگز کا خاتمہ کر کے بھارت کی آخری امید بھی ختم کر دی۔ ہارک پانڈیا نے جارحانہ بلے بازی کرتے ہوئے شاداب خان لگاتار 3 اور فخر زمان کو 2 چھکے رسید کر کے بھارتی ڈریسنگ روم میں کچھ امید پیدا کر دی لیکن جڈیجا کی غلط کال پر وہ رن آؤٹ ہو گئے تاہم وہ 43 گیندوں پر 6 چھکے اور 4 چوکوں کی مدد سے 76 رنز کی اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے۔ پانڈیا کو رن آؤٹ کروانے کے بعد روینڈرا جڈیجا خود بھی زیادہ اچھی کارکردگی نہ دکھا سکے اور 15 رنز پر آؤٹ ہو گئے جب کہ روی چندر ایشون بھی ایک رنز کے مہمان ثابت ہوئے۔ پاکستان کی جانب سے محمد عامر نے روہت شرما، ویرات کوہلی اور شیکھر دھون کی اننگز کا خاتمہ کیا، حسن علی نے ایم ایس دھونی اور ایشون کی اننگز کا خاتمہ کیا جب کہ شاداب خان یووراج سنگھ اور کیردار جادیو کی وکٹ لینے میں کامیاب رہے اور جنید خان کے حصے میں ایک وکٹ آئی۔

loading...