اشاعت کے باوقار 30 سال

منشیات نے 31 سالہ لڑکی کی جان لے لی

منشیات نے 31 سالہ لڑکی کی جان لے لی

رابرٹ وارکنٹین کا کہنا تھا کہ میں نے اپنی 31 سالہ بیٹی ایشٹن کک کی تکلیف کم کرنے کی ہر ممکن کوشش کی مگر منشیات کی عادی بیٹی کو مرنے سے نہ بچا سکا۔ ابھی چند ماہ پہلے ہی اس کی ماں ڈینین کک بھی فینٹانل کے کثرت استعمال کے باعث موت کو گلے لگا بیٹھی تھی۔ وارکنٹین کے مطابق 3 سال قبل ایشٹن کو کسی گینگسٹر نے تشدد کا نشانہ بنایا تھا جس سے اس کے چند دانت اور پسلیاں ٹوٹ گئی تھیں ۔ اس کے درد کو کم کرنے کے لئے ڈاکٹر نے جو دوا تجویز کی ایشٹن اس کی عادی ہو گئی۔ پھر چند ماہ قبل جب اس کی ماں بھی چل بسی تو اس کی حالت اور غیر ہو گئی۔ ایک مرتبہ مجھے اس کے کمرے سے آکسی کانٹین کی 120 گولیوں والی بوتل بھی ملی تھی، جو اس کے داکٹر نے تجویز کی تھی اور بوتل پر اس کا نام بھی لکھا تھا۔ میں اپنی بیٹی کے لئے کچھ بھی نہ کر سکا یہاں تک کہ یکم مارچ کو پولیس نے مجھے اطلاع دی کہ ایشٹن پیمبینا ہائی وے پر ایک ہوٹل کے کمرے میں مردہ پائی گئی ہے ۔