اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

حکومت نے کسان دشمنی کا بد ترین ثبوت دیا

حکومت نے کسان دشمنی کا بد ترین ثبوت دیا

اسلام آباد: قائد حزب اختلاف قومی اسمبلی سید خورشید احمد شاہ نے کہا ہے کہ حکومت نے کسانوں کو دھوکہ دینے کے لئے پہلے کسان پیکج کا اعلان کیا اور پھر کھاد پر دی جانے والی سبسڈی کو ختم کر کے کسان دشمنی کا بد ترین ثبوت دیا، سبسڈی واپس لے کر کاشتکاروں سے دھوکہ کیا گیا جو پہلے ہی شدید بدحالی کا شکار ہیں۔ بدھ کے روز اپنے چیمبر میں میڈیا سے بات کرتے ھوئے انہوں نے کہا کہ حکومت نے کاشتکاروں کو ریلیف دینے کی بجائے ان سے بچی کھچی مراعات بھی چھین لی ہیں اور حکومت کے ان منفی اقدامات سے زراعت کے پیشے کے ساتھ ساتھ زراعت سے وابستہ انڈسٹری بھی تباہ ہو جائے گی اور پھر ہم بھیک مانگ کر گندم، کاٹن اور دیگر اجناس امپورٹ کریں گے۔ اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ یہ بات سمجھ سے بالا ہے کہ اخر حکومت کس مقصد کے لئے زراعت کو تباہ کرنے پر تلی ہوئی ہے۔ انہوں نے کہ حکومت کی ناقص زرعی پالیسی کی وجہ سے اس وقت زرعی ترقی کی شرح صفر ہو چکی ھے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اپنے کسان دشمن اقدامات کو فی الفور واپس لے ورنہ پاکستان پیلز پارٹی ہر فورم پر حکومت کے زراعت مخالف اقدامات کے خلاف بھر پور احتجاج کرے گی۔ اور یہ احتجاج پارلیمنٹ کے اندر بھی ہو گا اور باہر بھی اور ہم کسی صورت یہ برداشت نہیں کریں گے کہ ملک کا وہ شعبہ تباہ جائے جس سے ہمارے ملک کی اکثریت وابستہ ہے اور جو ہماری معیشت کے لئے ریڑھ کی ہڈی کا درجہ رکھتی ہے۔ ضابطے کے تحت ہی دی جائیں اور یہ بھی واضح کیا جاے کہ تجویز سے ٹیکس وصولیوں اور دیگر تجارتی شعبوں پر کیا اثر پڑے گا۔ دریں اثناء سید خورشید احمد شاہ نے گورنر سندھ سعید الزماں صدیقی کی وفات پر دکھ کا اظہار کیا ھے۔ انہوں نے دعا کی کہ اللہ تعالی انہیں جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا کرے اور لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے۔