اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

تاریخ کا شدید ترین زلزلہ

ٹوئنٹی 20 نہ کھیل پانے پر ڈیوڈ وارنر کو طیش آگیا

ٹوئنٹی 20 نہ کھیل پانے پر ڈیوڈ وارنر کو طیش آگیا

سڈنی: آسٹریلوی اوپنر ڈیوڈ وارنر ٹوئنٹی 20 کرکٹ کھیلنے کا موقع ہاتھ سے نکلنے پر غصے میں آ گئے، ناقص شیڈولنگ پر اپنے ہی بورڈ کو کھری کھری سنا دیں، کہتے ہیں کہ جب ہمیں اپنے ملک میں ٹی 20 کرکٹ کھیلنے کا موقع ہی فراہم نہ کیا گیا تو ورلڈ ٹرافی کیا خاک جیت پائیں گے۔
آسٹریلیا آئندہ ماہ سری لنکا کی تین ٹوئنٹی 20 میچز کی سیریز کی میزبانی کرے گا، یہ میچز میلبورن، گیلونگ اور ایڈیلیڈ میں بالترتیب 17، 19 اور 22 جنوری کو کھیلے جائیں گے، دلچسپ بات یہ ہے کہ جس دن اس سیریز کا اختتام ہو گا اس سے اگلے روز ہزاروں میل دور پونے میں آسٹریلیا کا بھارت سے پہلا ٹیسٹ شیڈول ہے۔ مشکل ترین سیریز کی تیاریوں کے لیے ٹیسٹ اسکواڈ دو ہفتے قبل ہی دبئی پہنچ جائے گا جہاں پر آئی سی سی گلوبل اکیڈمی میں موجود اسپن وکٹوں پر پریکٹس کی جائے گی۔ اس طرح آسٹریلیا کے فرسٹ چوائس ٹوئنٹی20 پلیئرز کپتان اسٹیون اسمتھ، ڈیوڈ وارنر، عثمان خواجہ اور مچل اسٹارک وغیرہ اپنے ملک میں سری لنکا سے نہیں کھیل پائیں گے۔
ڈیوڈ وارنر اسی بات پر غصہ ہیں اور وہ کہتے ہیں کہ یہ درست ہے کہ شیڈولنگ کرکٹ آسٹریلیا کا کام ہے، وہ ہی اس کو ترتیب دیتے ہیں، میرا کام کھیلنا اور دوسری چیزوں کے بارے میں زیادہ فکرمند نہ ہونا ہے لیکن میں یہ ضرور کہنا چاہوں گا کہ شیڈولنگ بہت زیادہ ناقص ہے، میں اسے کسی بھی طور پر پسند نہیں کرتا، ہم جیسے وہ کھلاڑی جوکہ ٹوئنٹی 20 ٹیم کا حصہ ہیں ان کے کچھ مقاصد ہیں ہمیں اس مختصر ترین فارمیٹ میں ورلڈ کپ جیتنا ہے، اس کے لیے آپ کو ہر وقت بہترین ٹیم ہی میدان میں اتارنا ہوتی ہے، اگر میں ، اسمتھ، اسٹارک، عثمان اور شان مارش جیسے کھلاڑی آسٹریلیا میں کوئی ٹوئنٹی20 کرکٹ ہی نہیں کھیلیں گے جہاں پر اگلا مختصر ترین طرز کا میگا ایونٹ ہونا ہے تو پھر سلیکٹرز کے لیے ٹیم تیار کرنا مشکل ہو جائے گا۔
واضح رہے کہ 2020 میں ورلڈ ٹوئنٹی 20 آسٹریلیا میں منعقد ہوگا تاہم 2018 میں بھی ایک ورلڈ ٹی20 ہو گا جس کے میزبان کا اعلان نہیں ہوا۔ یاد رہے کہ آسٹریلیا نے مختصر ترین طرز میں ابھی تک کوئی بھی ٹائٹل نہیں جیتا۔