اشاعت کے باوقار 30 سال

بھارتی فوج میں کرپشن اور جوانوں سے ناروا سلوک کا انکشاف

بھارتی فوج میں کرپشن اور جوانوں سے ناروا سلوک کا انکشاف

بھارتی فوج میں کرپشن اور جوانوں سے ناروا سلوک کا انکشاف ہوا ہے، بارڈر پر تعینات بھارتی فوج کے ایک سپاہی کا کہنا ہے کہ بارڈر پر ڈیوٹی دینے والوں کو کھانا نہیں ملتا، جو راشن آتا ہے افسران کھا جاتے ہیں، راشن بازاروں میں بھیج دیا جاتا ہے، بھارتی فوج کی 29 بٹالین سے تعلق رکھنے والے سپاہی شیج بہادر بادیو نے فیس پر دی گئی ویڈیو میں کہاہے کہ پاکستان کی سرحد پر تعینات بھارتی فوجیوں کو پلیٹ بھر کر کھانا نہیں ملتا، صبح پراٹھے کے ساتھ تھوڑی چائے دی جاتی ہے، دوپہر کو ہلدی والی دال اور دو روٹیاں دی جاتی ہیں فوج کے لئے جو راشن آتا ہے وہ افسران کھا جاتے ہیں اور راشن بازاروں میں بیچ دیا جاتا ہے۔ بھارتی فوجی کا کہنا ہے کہ فوج کو کئی بار رات کو بھوکے پیٹ سونا پڑتا ہے کیا خالی پیٹ سرحد پر لڑا جا سکتا ہے۔