اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

آسمان پھٹا نہ زمین، ماں بیٹے نے آپس میں شادی کرلی

لندن: دنیا میں بیہودگی کی بہت سی مثالیں ہیں لیکن یہ خوفناک خبر پڑھ کر آپ یقینا" مغربی تہذیب کی بربادی پر ماتم کرنے پر مجبور ہوجائیں گے۔ ماں بیٹے کا رشتہ دنیا کا سب سے مقدس رشتہ کہلاتا ہے لیکن کیا کہیں گے ایسے ماں بیٹے کے بارے میں جو نہ صرف آپس میں شادی کر لیں بلکہ بڑے فخر سے اپنی جنسی زندگی کی خوشی کا اظہار بھی کرتے پھریں۔ یہ واقعہ لندن میں پیش آیا ہے جہاں ایک نوجوان لڑکے "بین فورڈ" نے ماں سے شادی کی خاطر اپنی بیوی کو چھوڑ دیا۔ 30 سال پہلے بین کی 52 سالہ ماں نے اپنے بیٹے کو پیدائش کے بعد کسی اور کے حوالے کر دیا تھا۔ لیکن اب 30 سال بعد دونوں اچانک ملے تو دونوں کو ایک دوسرے سے پیار ہوگیا ۔دونوں کی ملاقات تب ہوئی جب ایک دن اچانک امریکہ میں رہنے والے بیٹے بین فورڈ نے اپنی برطانوی نژاد ماں کو 2013 میں ایک خط لکھا۔ پھر ماں بیٹے میں فون پر رابطہ ہوا اور ایک دن بیٹے نے اچانک اپنی بیوی کو طلاق دے دیا اور اپنی ماں سے شادی رچا لی۔بین کا کہنا ہے کہ مجھے لگتا ہے جیسے میں اور میری ماں ایک دوسرے کو صدیوں سے جانتے ہیں۔ اس نے بتایا کہ میں نے نے انٹرنیٹ پر تلاش شروع کی تو مجھے "جنیاتی جنسی کشش" کے بارے میں مواد پڑھنے کو ملا جس کے مطابق کچھ خون کے رشتے بالغ ہونے کے بعد آپس میں ملنے پر جنسی کشش محسوس کرتے ہیں۔ بین کی ماں کے مطابق یہ پاکیزہ نہیں ہے لیکن یہ "جنیاتی جنسی کشش" ہے اور ہم دونوں مٹر کے دانوں کی طرح ہیں جنہیں ہمیشہ اکٹہے رہنا ہے اور ہم دونوں اس رشتے کو کبھی ختم نہیں کرنا چاہتے بلکہ ہماری خواہش ہے کہ ہماری اولاد بھی پیدا ہو۔