اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

سیارہ پلوٹو کی دریافت

رضا شاہ پہلوی کو ایران چھوڑنا پڑا

فوج کی بغاوت اور ملک میں تشدد آمیز مظاہروں کے پھوٹ پڑنے کے باعث 1941 سے برسر اقتدار شہنشاہ محمد رضا شاہ پہلوی کو آج کے دن 1979 میں مسند اقتدار چھوڑ کر ملک سے فرار ہونا پڑا۔ 14 دن بعد اسلامی انقلاب کے قائد آیت اللہ خمینی نے ملک کی باگ ڈور سنبھال لی۔ 1941 میں برطانیہ اور امریکہ نے پہلے پہلوی شہنشاہ کو اقتدار سے محروم کر کے رضا شاہ پہلوی کو اقتدار کے سنگھاسن پر بٹھایا تھا۔ 1953 میں وزیر اعظم مصدق کی وجہ سے شاہ ایران کو ملک چھوڑنا پڑا تھا۔ اس وقت بھی امریکہ اور برطانیہ کی مداخلت کی وجہ سے شاہ ایران کو ان کا اقتدار واپس ملا تھا۔ 1978 کے اواخر میں فوج کے ایک حصے نے بغاوت کر دی اور آیت اللہ خمینی کے کہنے پر عوامی مظاہروں میں شدت آ گئی۔ ان حالات میں 16 جنوری 1979 کو شاہ ایران کو ملک سے فرار ہونا پڑا۔ مختلف ملکوں سے ہوتے ہوئے وہ اکتوبر 1979 میں علاج کی خاطر امریکہ چلے گئے۔ 4 نومبر کو اسلامی شدت پسندوں نے تہران میں امریکی سفارت خانے پر حملہ کر کے 52 امریکیوں کو یرغمال بنا لیا اور ان کے بدلے شاہ ایران کی واپسی کا مطالبہ کیا۔ امریکہ نے یہ مطالبہ مسترد کر دیا مگر شاہ ایران وہاں سے مصر چلے گئے جہاں جولائی 1980 میں ان کا انتقال ہو گیا۔