اشاعت کے باوقار 30 سال

سوویت یونین کے سربراہ ولادیمیر لینن کا انتقال

بالشویک انقلاب کے بانی اور سوویت یونین کے پہلے سربراہ ولادیمیر لینن آج کے دن 1924 میں 54 سال کی عمر میں برین ہیموراج کے باعث انتقال کر گئے۔ ولادیمیر لینن 1890 میں وکالت کا پیشہ ترک کر کے مارکس کی تعلیمات و نظریات کے مطالعہ میں کھو گئے۔ 1897 میں وہ یورپ چلے گئے ، اور وہاں رشین سوشل ڈیموکریٹک ورکرز پارٹی کے بالشویک دھڑے کی بنیاد رکھی۔ جو ایک عسکریت پسند گروہ تھا اور زار کو اقتدار سے محروم کر کے مارکسی طرز کی حکومت قائم کرنا چاہتا تھا۔ مارچ 1917 میں فوج بھی بالشویک دھڑے کی حامی ہو گئی۔ 16 اپریل کو لینن جرمنی کے راستے وطن واپس آئے۔ چھ ماہ بعد بالشویکوں نے زار کا تختہ الٹ کر اقتدار پر قبضہ کر لیا۔ لینن اس نئی حکومت کے سربراہ بن گئے۔ 30 اکتوبر کو یونین آف سوویت سوشلسٹ ریپبلکس کا قیام عمل میں آیا۔ 21 جنوری 1924 کو لینن کا انتقال ہو گیا تو ان کی لاش کو حنوط کر کے ماسکو کریملن کے قریب ایک عجائب گھر میں رکھ دیا گیا۔ پیٹر گراڈ کو ان کے اعزاز میں لینن گراڈ کا نام دے دیا گیا۔ ان کے بعد انقلاب کی جد و جہد میں ان کے ساتھی جوزف سٹالن نے اقتدار سنبھال لیا۔